مالیگاؤں اور کورونا وائرس

مالیگاؤں شہر میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے. اس کے باوجود مالیگاؤں شہر کی عوام اس جان لیوا بیماری کو بیماری نہیں سمجھ رہی یے. عوام نہ ہی سوشل ڈسٹنس کو فولو کررہے ہیں اور نہ ہی کوئی دوسری احتیاطی تدابیر اختیار کر رہے ہیں.

یہ کورونا ورونا کچھ نہیں ہے سب فالتو باتیں ہیں. زبردستی کسی کو بھی کورونا بتا رہے ہیں. وغیرہ وغیرہ ایسی تمام باتیں بڑی گردش میں ہے

یہ بیماری صرف مالیگاؤں ہی نہیں اور نہ ہی صرف ہندوستان میں بلکہ پوری دنیا میں پھیلی ہوئی ہے. اسے خدا کیلئے مزاق نا سمجھے. لوگ بلاوجہ سڑکوں پر گھوم رہے ہیں جیسے لاکڈاؤن ہو ہی نا. پولس نے عوام سے اپیل کی ماسک لگائیں گھر پر رہے لیکن کسی پر کچھ اثر نہیں. افطاری کی خریداری کے لئے ریایت دی گئ ہے لیکن مالیگاؤں کی عوام تو اسے تفریح کے اوقات کے طور پر استعمال کر رہے ہیں. گلیؤں اور چوکوں میں مجموعی طور پر محلے کے تمام افراد اس بات کی گفتگو کررہے ہیں کہ سرکار اور لیڈرس صحیح کام نہیں کررہے ہیں اور ڈاکٹرس اپنی ذمہ داریاں نہیں نبھا رہی ہیں.

کیا عوام خد اپنی ذمہ داریاں پوری کرریہ ہے.
کارپورٹرس اور محلے کے ذمہ داران سے گزارش ہے کہ سب اپنے اپنے علاقوں میں لوگوں کو اکٹھا نہ ہو نے دیں.

ہمارے مالیگاؤں میں کورونا وائرس کے مریضوں کے علاج کے لیے اتنی اچھی سہولیات نہیں ہے جو مریض اس وقت دواخانہ میں زیر علاج ہیں وہ اسے بخوبی جانتے ہیں. ڈاکٹرس اور سہولیات کی بھی کمی ہے.

ہم خود بھی گھروں سے باہر نہ نکلیں اور گھروالوں کو بھی جانے نہ دیں. اپنی حفاظت خود کریں اللہ تعالیٰ کے سوا کسی کہ محتاج نہ رہیں.

mlgheadlines: